48

ہم موسیقی یا داڑھی منڈوانے پر پابندی نہیں لگائیں گے: افغان طالبان

قندھار کے طالبان گورنر نے مذہبی اسکالرز اور علماء کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے یہ واضح کر دیا کہ ہم افغانستان کے اسلامی امارات میں موسیقی یا داڑھی منڈوانے پر پابندی نہیں لگا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم کسی کو داڑھی منڈوانے یا موسیقی سننے پر مجبور نہیں کریں گے لیکن اس کے ساتھ ساتھ علماء کی ذمہ داری ہے کہ وہ اچھے اور برے کاموں اور گناہوں کے بارے میں اسلام کے تناظر میں عوام کے درمیان آگاہی پھیلائیں۔

اس سے قبل ، طالبان نے خواتین کے لیے بھی برقع کو لازمی نہ بنانے کا اعلان کیا تھا لیکن حجاب ضروری قرار دیا۔ مزید یہ کہ انہوں نے شریعت کے مقرر کردہ فریم ورک کے تحت خواتین کو تعلیم اور ملازمت کے حقوق دینے کا بھی اعلان کیا۔ آپ انکے ان اقدامات کو کیسے لیتے ہیں جو انہوں نے اب تک لیے ہیں؟

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں