siasidugout 81

سیاحت اور پاکستان

اس میں کوئی دوراہے نہیں کہ سیاحت کسی بھی ملک کی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کا کردار ادا کرتی ہے سیاحت سے بیشتر لوگوں کا روزگار جڑا ہوتا ہے
پاکستان قدرت کے حسن سے مالا مال ہے لیکن کبھی کسی نے اس کی قدرتی خوبصورتی کو ایکسپلور کرنے کی کوشش نا کی گئی 70 کی دہائی میں جدھر دوسرے شعبوں میں ترقی ہوئی تھی ادھر سیاحت کو بھی فروغ ملا تھا اس کے بعد سے ہمیشہ سے سیاحت کے شعبے کو نظر انداز کیا گیا پاکستان میں ریگستان،سر سبزو شااداب میدان خوبصورت جھیلیں وادیاں ،جنگلات پہاڑ جزائر اور اس کے علاوہ بہت کچھ ہے جو قابلِ دید ہے لیکن افسوس کے ساتھ اس شعبے کو نظر انداز کیا گیا اور اس کے ساتھ پاکستان میں امن و امان کے مسائل کی وجہ سے بھی اس شعبے کو بہت نقصان پہنچا

لیکن اب وزیراعظم عمران خان نے اس شعبے کی طرف خاص توجہ دی اور صوبائی حکومتوں کی توجہ بھی مبذول کرائی خان صاحب کی انہیں کاوشوں کی وجہ سے اب پاکستان جدھر دوسرے شعبوں میں آگے بڑھ آ رہا ہے ادھر سیاحت کے شعبے کو بھی دوبارہ سے پہچان مل رہی ہے
پاکستان میں سیکنڑوں سیاحتی مقامات ہیں خصوصاً شمالی علاقہ جات میں سیاحت اپنے عروج پر ہے سیاحتی مقامات کے ساتھ ساتھ پاکستان کا ثقافتی ورثہ بھی قابلِ دید ہے جس میں مختلف قلعے تاریخی مقامات مثلاً بادشاہی مسجد نور محل اور دیگر مقامات شامل ہیں.

حکومت کو چاہیے کہ دور دراز علاقوں میں جہاں پرک سیاحتی مقامات ہیں لیکن انفراسٹرکچر کا بیڑہ غرق ہوا پڑھا ادھر خصوصی توجہ دی جائے ہر طرح کی سہولت ہو تاکہ سیاحوں کے لیے آسانی ہو اور عوام کو بھی چاہیے کہ اچھے شہری ہونے کا ثبوت دیں گند وغیرہ پھیلانے سے گریز کریں

تحریر ؛ ثانیہ رضوان

آپ ثانیہ رضوان کو ٹویٹر پر بھی @Saniya19_ فالو کر سکتے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں