Daughters are a mercy, not a nuisance 5

بیٹیاں رحمت ہیں زحمت نہیں

حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم عالمین کے لئے رحمت بن کر آئے چونکہ بیٹیاں رحمت ہوتی ہیں اس لئے حضرت فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے لیے بھی رحمت بن کر آئیں

باپ کو ہمیشہ بیٹے کی نسبت بیٹیوں سے پیار ہوتا ہے اس کی وجہ صرف اور صرف یہ ہے کہ بیٹیاں شادی کے بعد رخصت ہو جاتی ہیں اور والد کی خواہش ہوتی ہے کہ سسرال میں پتہ نہیں کیسی زندگی گزارے اس لئے وہ شادی سے پہلے بیٹی کی ہر خواہش پوری کرنا چاہتا ہے اور اس کو زیادہ سے زیادہ پیار اور محبت دیتا ہے

مجھ بدقسمت کو اللہ تعالی نے دو بیٹیاں دی زائرہ بتول ڈلیوری کے وقت وفات پا گئی اور دوسری حرمین بتول 5 ماہ گزارنے کے بعد وفات پا گئی

میرا دل آج بھی انکے لیے تڑپتا ہے

سسرال میں لڑکیوں کو بہت سی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے اس لیے خدارا اپنی بیٹیوں کو زیادہ سے زیادہ پیار دیں جب تک وہ آپ کے گھر میں ہیں اللہ تعالی کی رحمت ہر وقت آپ کے گھر کا طواف کرے گی

کوشش کیجئے کہ اپنی حیثیت کے مطابق بیٹیوں کی خواہشات پوری کی جائیں دوسروں کی بیٹیوں کو بھی اپنی بیٹی اگر سمجھا جائے تو تمام گھروں میں امن اور سکون آجائے گا

گھروں میں امن اور سکون ہوگا تو بچوں کی پرورش بہتر ہو گی بچوں کی بہتر پرورش سے بہترین معاشرہ معرض وجود میں آئے گا

آج بھی کچھ نامراد لوگ بیٹی پیدا ہونے پر افسردہ ہو جاتے ہیں اور برادری کے لوگ بجائے مبارکباد کے افسوس کرنے آجاتے ہیں جبکہ ہمارے پیارے نبی حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے بیٹیوں کی عظمت اور شان کو بہترین طریقے سے بیان کیا

بیٹی سے پیار اور محبت کرنا نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سنت مبارکہ ہے سنت پر عمل کیجئے اپنے پیارے نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو خوش اور راضی کیجئے

جس سے نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم راضی اور خوش ہوئے اس سے اللہ تعالی راضی اور خوش ہوا

خدارا بیٹیوں کو رحمت سمجھیں زحمت نہیں

آخر میں میرے لیے دعا کیجئے کہ اللہ تعالی مجھے حضرت فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا کی سیرت پر عمل کرنے والی بیٹی عطا فرمائے

آمین ثم آمین

تحریر؛ صداقت حسین علوی

آپ صداقت حسین علوی کو ٹویٹر پر بھی @AlviViews فالو کر سکتے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں